مسجد گوہر شاد – مشهد

Rate this item
(0 votes)

گوہر شاد مسجد کا اندرونی حصہ ایرانی کاریگروں کے فن کا منہ بولتا ثبوت ہے

گوہر شاد مسجد ایران کے صوبہ خراسان کے شہر مشہد کی ایک معروف مسلم عبادت گاہ ہے۔ " مسجد گوہر شاد" روضہ امام رضا (ع) كے جنوب ميں واقع ہے-

یہ مسجد تیموری سلطنت کے دوسرے فرمانروا شاہ رخ تیموری کی اہلیہ گوہر شاد کے حکم پر 1418ء میں تعمیر کی گئی اور اسے اس وقت کے معروف ماہر تعمیر غوام الدین شیرازی نے تعمیر کیا جو تیموری عہد کی کئی عظیم الشان تعمیرات کے معمار بھی ہیں۔ صفوی اور قاچار دور میں اس مسجد میں تزئین و آرائش کا کام بھی کیا گیا۔

مسجد كا وسيع صحن ہے – مسجد كے گنبد پر كاشي كاري ہوئي ہے - مسجد میں 4 ایوان اور 50 ضرب 55 میٹر کا ایک وسیع صحن اور متعدد شبستان بھی ہیں۔ مسجد کا گنبد 1911ء میں روسی افواج کی گولہ باری سے شدید متاثر ہوا۔ یہ مسجد 15 ویں صدی کی ایرانی تعمیرات کا اولین اور اب تک محفوظ شاہکار ہے۔ اس کے داخلی راستے میں سمرقندی انداز کی محراب در محراب ہیں جبکہ بلند مینار بھی اس کی شان و شوکت کو مزید بڑھاتے ہیں۔

اس مسجد كے بہت سے اوقاف ہيں جن كي ديكه بال آستانہ قدس رضوي كا متولي كرتا ہے-

 

گوہر شاد نے مذكوره مسجد كے علاوه حرم امام رضا (ع) اور اي كے اطراف ميں ديگر عمارتيں بهي بنوائي تهيں جو كہ دارالسياده، دارالتوحيد اور دارالضيافہ سے عبارت ہيں-

گوہر شاد كو سلطان ابوسعيد محمد بن مير انشاه بن تيمور لنگ كے حكم سے هرات ميں قتل كيا گيا-

Read 1369 times

Add comment


Security code
Refresh