فرقہ زیدیہ

Rate this item
(0 votes)

زیدیہ کون لوگ ہیں ؟

امام سجاد (علیہ السلام) کے فرزند زید شہید کی پیروی کرنے والوں کو زیدیہ کہتے ہیں ۔ زید نے ۱۲۱ ہجری میں اموی خلیفہ ہشام بن عبدالملک کے خلاف قیام کیا اور ایک گروہ نے آپ کی بیعت کرلی، شہر کوفہ میں خلیفہ کے لشکر کے ساتھ آپ کی جنگ ہوئی اور اسی جنگ میں آپ کو قتل کردیا گیا۔ ان کے ماننے والے آپ کو اہل بیت (علیہم السلام) سے پانچواں امام شمار کرتے ہیں ، ان کے بعد آپ کے بیٹے یحیی بن زید کو خلیفہ مانتے ہیں جنہوں نے ولید بن یزید کے خلاف قیام کیا تھا اور قتل ہوگئے تھے ، ان کے بعد محمد بن عبداللہ اور ابراہیم بن عبداللہ کو اپنا امام مانتے ہیں انہوں نے بھی خلیفہ عباسی ، منصور دوانیقی کے خلاف قیام کیا اور قتل ہوگئے ، ان کے بعد ایک زمانہ تک فرقہ زیدیہ میں کوئی نظم انتظام نہیں تھا یہاں تک کہ ناصر اطروش ، جناب زید کے بھتیجے نے خراسان میں ظہور کیا اور حکومت کے ڈر سے فرار کرکے مازندران پہنچے وہاں پر ابھی تک لوگوں نے اسلام قبول نہیں کیا تھا اور تیرہ سال کے عرصہ میں انہوں نے بہت سے لوگوں کو مسلمان کیا اور مذہب زیدیہ میں داخل کرلیا ، اس کے بعد ان کی مدد سے طبرستان پر قبضہ کرلیا اور اپنی امامت کا اعلان کردیا ، اس کے بعد ایک مدت تک ان کے بعد آنے والوں نے بڑے ہی سکون کے ساتھ امامت کی ۔ ان کے عقیدے کے مطابق جو بھی فاطمی ، عالم، زاہد، شجاع اور سخی ہو اور قیام بہ حق کرے وہ امام ہوسکتا ہے ، جو کچھ بیان ہوا ہے اس کے مطابق زیدیہ ، اصول اسلام میں معتزلہ اور فروع میں فقہ امام ابی حنیفہ کی طرف منسوب ہیں ، ان کے درمیان کچھ مسائل میں اختلاف ہے (۱) ۔

 

۱۔ شیعہ در اسلام، ص ۶۶ و ۶۷۔

Read 2254 times

Add comment


Security code
Refresh