سوره الواقعة

Rate this item
(0 votes)
سوره الواقعة

بِسْمِ اللَّهِ الرَّحْمَنِ الرَّحِيمِ


عظیم اور دائمی رحمتوں والے خدا کے نام سے


﴿1﴾ إِذَا وَقَعَتِ الْوَاقِعَةُ
(1) جب قیامت برپا ہوگی


﴿2﴾ لَيْسَ لِوَقْعَتِهَا كَاذِبَةٌ
(2) اور اس کے قائم ہونے میں ذرا بھی جھوٹ نہیں ہے

﴿3﴾ خَافِضَةٌ رَّافِعَةٌ 
(3) وہ الٹ پلٹ کر دینے والی ہوگی


﴿4﴾ إِذَا رُجَّتِ الْأَرْضُ رَجًّا
(4) جب زمین کو زبردست جھٹکے لگیں گے


﴿5﴾ وَبُسَّتِ الْجِبَالُ بَسًّا 
(5) اور پہاڑ بالکل چور چور ہوجائیں گے


﴿6﴾ فَكَانَتْ هَبَاء مُّنبَثًّا
(6) پھر ذرات بن کر منتشر ہوجائیں گے


﴿7﴾ وَكُنتُمْ أَزْوَاجًا ثَلَاثَةً
(7) اور تم تین گروہ ہوجاؤ گے


﴿8﴾ فَأَصْحَابُ الْمَيْمَنَةِ مَا أَصْحَابُ الْمَيْمَنَةِ
(8) پھر داہنے ہاتھ والے اور کیا کہنا داہنے ہاتھ والوں کا


﴿9﴾ وَأَصْحَابُ الْمَشْأَمَةِ مَا أَصْحَابُ الْمَشْأَمَةِ
(9) اور بائیں ہاتھ والے اور کیا پوچھنا ہے بائیں ہاتھ والوں کا


﴿10﴾ وَالسَّابِقُونَ السَّابِقُونَ
(10) اور سبقت کرنے والے تو سبقت کرنے والے ہی ہیں

﴿11﴾ أُوْلَئِكَ الْمُقَرَّبُونَ
(11) وہی اللہ کی بارگاہ کے مقرب ہیں


﴿12﴾ فِي جَنَّاتِ النَّعِيمِ
(12) نعمتوں بھری جنتوں میں ہوں گے


﴿13﴾ ثُلَّةٌ مِّنَ الْأَوَّلِينَ
(13) بہت سے لوگ اگلے لوگوں میں سے ہوں گے


﴿14﴾ وَقَلِيلٌ مِّنَ الْآخِرِينَ 
(14) اور کچھ آخر دور کے ہوں گے


﴿15﴾ عَلَى سُرُرٍ مَّوْضُونَةٍ 
(15) موتی اور یاقوت سے جڑے ہوئے تختوں پر


﴿16﴾ مُتَّكِئِينَ عَلَيْهَا مُتَقَابِلِينَ
(16) ایک دوسرے کے سامنے تکیہ لگائے بیٹھے ہوں گے


﴿17﴾ يَطُوفُ عَلَيْهِمْ وِلْدَانٌ مُّخَلَّدُونَ
(17) ان کے گرد ہمیشہ نوجوان رہنے والے بچے گردش کررہے ہوں گے


﴿18﴾ بِأَكْوَابٍ وَأَبَارِيقَ وَكَأْسٍ مِّن مَّعِينٍ 
(18) پیالے اور ٹونٹی وار کنٹر اور شراب کے جام لئے ہوئے ہوں گے


﴿19﴾  لَا يُصَدَّعُونَ عَنْهَا وَلَا يُنزِفُونَ 
(19) جس سے نہ درد سر پیدا ہوگا اور نہ ہوش و حواس گم ہوں گے


﴿20﴾ وَفَاكِهَةٍ مِّمَّا يَتَخَيَّرُونَ 
(20) اور ان کی پسند کے میوے لئے ہوں گے

﴿21﴾ وَلَحْمِ طَيْرٍ مِّمَّا يَشْتَهُونَ
(21) اور ان پرندوں کا گوشت جس کی انہیں خواہش ہوگی


﴿22﴾ وَحُورٌ عِينٌ
(22) اور کشادہ چشم حوریں ہوں گی


﴿23﴾ كَأَمْثَالِ اللُّؤْلُؤِ الْمَكْنُونِ
(23) جیسے سربستہ ہوتی


﴿24﴾ جَزَاء بِمَا كَانُوا يَعْمَلُونَ 
(24) یہ سب درحقیقت ان کے اعمال کی جزا اور اس کا انعام ہوگا


﴿25﴾ لَا يَسْمَعُونَ فِيهَا لَغْوًا وَلَا تَأْثِيمًا
(25) وہاں نہ کوئی لغویات سنیں گے اور نہ گناہ کی باتیں


﴿26﴾ إِلَّا قِيلًا سَلَامًا سَلَامًا
(26) صرف ہر طرف سلام ہی سلام ہوگا


﴿27﴾ وَأَصْحَابُ الْيَمِينِ مَا أَصْحَابُ الْيَمِينِ
(27) اور داہنی طرف والے اصحاب ... کیا کہنا ان اصحاب یمین کا


﴿28﴾ فِي سِدْرٍ مَّخْضُودٍ
(28) بے کانٹے کی بیر


﴿29﴾ وَطَلْحٍ مَّنضُودٍ
(29) لدے گتھے ہوئے کیلے


﴿30﴾ وَظِلٍّ مَّمْدُودٍ
(30) پھیلے ہوئے سائے


﴿31﴾ وَمَاء مَّسْكُوبٍ
(31) جھرنے سے گرتے ہوئے پانی


﴿32﴾ وَفَاكِهَةٍ كَثِيرَةٍ
(32) کثیر تعداد کے میوؤں کے درمیان ہوں گے

﴿33﴾ لَّا مَقْطُوعَةٍ وَلَا مَمْنُوعَةٍ
(33) جن کا سلسلہ نہ ختم ہوگا اور نہ ان پر کوئی روک ٹوک ہوگی


﴿34﴾ وَفُرُشٍ مَّرْفُوعَةٍ
(34) اور اونچے قسم کے گدے ہوں گے


﴿35﴾ إِنَّا أَنشَأْنَاهُنَّ إِنشَاء
(35) بیشک ان حوروں کو ہم نے ایجاد کیا ہے


﴿36﴾ فَجَعَلْنَاهُنَّ أَبْكَارًا
(36) تو انہیں نت نئی بنایا ہے


﴿37﴾ عُرُبًا أَتْرَابًا
(37) یہ کنواریاں اور آپس میں ہمجولیاں ہوں گی


﴿38﴾ لِّأَصْحَابِ الْيَمِينِ
(38) یہ سب اصحاب یمین کے لئے ہیں


﴿39﴾ ثُلَّةٌ مِّنَ الْأَوَّلِينَ
(39) جن کا ایک گروہ پہلے لوگوں کا ہے


﴿40﴾  وَثُلَّةٌ مِّنَ الْآخِرِينَ
(40) اور ایک گروہ آخری لوگوں کا ہے


﴿41﴾ وَأَصْحَابُ الشِّمَالِ مَا أَصْحَابُ الشِّمَالِ
(41) اور بائیں ہاتھ والے تو ان کا کیا پوچھنا ہے


﴿42﴾ فِي سَمُومٍ وَحَمِيمٍ
(42) گرم گرم ہوا کھولتا ہوا پانی


﴿43﴾ وَظِلٍّ مِّن يَحْمُومٍ
(43) کالے سیاہ دھوئیں کا سایہ


﴿44﴾ لَّا بَارِدٍ وَلَا كَرِيمٍ
(44) جو نہ ٹھنڈا ہو اور نہ اچھا لگے


﴿45﴾ إِنَّهُمْ كَانُوا قَبْلَ ذَلِكَ مُتْرَفِينَ 
(45) یہ وہی لوگ ہیں جو پہلے بہت آرام کی زندگی گزار رہے تھے


﴿46﴾ وَكَانُوا يُصِرُّونَ عَلَى الْحِنثِ الْعَظِيمِ
(46) اور بڑے بڑے گناہوں پر اصرار کررہے تھے


﴿47﴾ وَكَانُوا يَقُولُونَ أَئِذَا مِتْنَا وَكُنَّا تُرَابًا وَعِظَامًا أَئِنَّا لَمَبْعُوثُونَ
(47) اور کہتے تھے کہ کیا جب ہم مرجائیں گے اور خاک اور ہڈی ہوجائیں گے تو ہمیں دوبارہ اٹھایا جائے گا


﴿48﴾ أَوَ آبَاؤُنَا الْأَوَّلُونَ 
(48) کیا ہمارے باپ دادا بھی اٹھائے جائیں گے

﴿49﴾ قُلْ إِنَّ الْأَوَّلِينَ وَالْآخِرِينَ 
(49) آپ کہہ دیجئے کہ اولین و آخرین سب کے سب


﴿50﴾ لَمَجْمُوعُونَ إِلَى مِيقَاتِ يَوْمٍ مَّعْلُومٍ
(50) ایک مقرر دن کی وعدہ گاہ پر جمع کئے جائیں گے


﴿51﴾ ثُمَّ إِنَّكُمْ أَيُّهَا الضَّالُّونَ الْمُكَذِّبُونَ
(51) اس کے بعد تم اے گمراہو اور جھٹلانے والوں


﴿52﴾ لَآكِلُونَ مِن شَجَرٍ مِّن زَقُّومٍ 
(52) تھوہڑ کے درخت کے کھانے والے ہو گے


﴿53﴾ فَمَالِؤُونَ مِنْهَا الْبُطُونَ
(53) پھر اس سے اپنے پیٹ بھرو گے


﴿54﴾ فَشَارِبُونَ عَلَيْهِ مِنَ الْحَمِيمِ
(54) پھر اس پر کھولتا ہوا پانی پیو گے

﴿55﴾ فَشَارِبُونَ شُرْبَ الْهِيمِ
(55) پھر اس طرح پیو گے جس طرح پیاسے اونٹ پیتے ہیں


﴿56﴾ هَذَا نُزُلُهُمْ يَوْمَ الدِّينِ 
(56) یہ قیامت کے دن ان کی مہمانداری کا سامان ہوگا


﴿57﴾ نَحْنُ خَلَقْنَاكُمْ فَلَوْلَا تُصَدِّقُونَ
(57) ہم نے تم کو پیدا کیا ہے تو دوبارہ پیدا کرنے کی تصدیق کیوں نہیں کرتے


﴿58﴾ أَفَرَأَيْتُم مَّا تُمْنُونَ
(58) کیا تم نے اس نطفہ کو دیکھا ہے جو رحم میں ڈالتے ہو


﴿59﴾ أَأَنتُمْ تَخْلُقُونَهُ أَمْ نَحْنُ الْخَالِقُونَ
(59) اسے تم پیدا کرتے ہو یا ہم پیدا کرنے والے ہیں


﴿60﴾ نَحْنُ قَدَّرْنَا بَيْنَكُمُ الْمَوْتَ وَمَا نَحْنُ بِمَسْبُوقِينَ
(60) ہم نے تمہارے درمیان موت کو مقدر کردیا ہے اور ہم اس بات سے عاجز نہیں ہیں


﴿61﴾ عَلَى أَن نُّبَدِّلَ أَمْثَالَكُمْ وَنُنشِئَكُمْ فِي مَا لَا تَعْلَمُونَ
(61) کہ تم جیسے اور لوگ پیدا کردیں اور تمہیں اس عالم میں دوبارہ ایجاد کردیں جسے تم جانتے بھی نہیں ہو


﴿62﴾ وَلَقَدْ عَلِمْتُمُ النَّشْأَةَ الْأُولَى فَلَوْلَا تَذكَّرُونَ
(62) اور تم پہلی خلقت کو تو جانتے ہو تو پھر اس میں غور کیوں نہیں کرتے ہو


﴿63﴾ أَفَرَأَيْتُم مَّا تَحْرُثُونَ 
(63) اس دا نہ کو بھی دیکھا ہے جو تم زمین میں بوتے ہو


﴿64﴾ أَأَنتُمْ تَزْرَعُونَهُ أَمْ نَحْنُ الزَّارِعُونَ
(64) اسے تم اگاتے ہو یا ہم اگانے والے ہیں

﴿65﴾ لَوْ نَشَاء لَجَعَلْنَاهُ حُطَامًا فَظَلَلْتُمْ تَفَكَّهُونَ
(65) اگر ہم چاہیں تو اسے چور چور بنادیں تو تم باتیں ہی بناتے رہ جاؤ

﴿66﴾ إِنَّا لَمُغْرَمُونَ
(66) کہ ہم تو بڑے گھاٹے میں رہے


﴿67﴾ بَلْ نَحْنُ مَحْرُومُونَ
(67) بلکہ ہم تو محروم ہی رہ گئے


﴿68﴾ أَفَرَأَيْتُمُ الْمَاء الَّذِي تَشْرَبُونَ
(68) کیا تم نے اس پانی کو دیکھا ہے جس کو تم پیتے ہو


﴿69﴾ أَأَنتُمْ أَنزَلْتُمُوهُ مِنَ الْمُزْنِ أَمْ نَحْنُ الْمُنزِلُونَ 
(69) اسے تم نے بادل سے برسایا ہے یا اس کے برسانے والے ہم ہیں


﴿70﴾ لَوْ نَشَاء جَعَلْنَاهُ أُجَاجًا فَلَوْلَا تَشْكُرُونَ
(70) اگر ہم چاہتے تو اسے کھارا بنادیتے تو پھر تم ہمارا شکریہ کیوں نہیں ادا کرتے ہو


﴿71﴾ أَفَرَأَيْتُمُ النَّارَ الَّتِي تُورُونَ
(71) کیا تم نے اس آگ کو دیکھا ہے جسے لکڑی سے نکالتے ہو


﴿72﴾ أَأَنتُمْ أَنشَأْتُمْ شَجَرَتَهَا أَمْ نَحْنُ الْمُنشِؤُونَ
(72) اس کے درخت کو تم نے پیدا کیا ہے یا ہم اس کے پیدا کرنے والے ہیں


﴿73﴾ نَحْنُ جَعَلْنَاهَا تَذْكِرَةً وَمَتَاعًا لِّلْمُقْوِينَ
(73) ہم نے اسے یاد دہانی کا ذریعہ اور مسافروں کے لئے نفع کا سامان قرار دیا ہے


﴿74﴾ فَسَبِّحْ بِاسْمِ رَبِّكَ الْعَظِيمِ
(74) اب آپ اپنے عظیم پروردگار کے نام کی تسبیح کریں


﴿75﴾ فَلَا أُقْسِمُ بِمَوَاقِعِ النُّجُومِ

(75) اور میں تو تاروں کے منازل کی قسم کھاکر کہتا ہوں


﴿76﴾ وَإِنَّهُ لَقَسَمٌ لَّوْ تَعْلَمُونَ عَظِيمٌ 

(76) اور تم جانتے ہو کہ یہ قسم بہت بڑی قسم ہے


﴿77﴾ إِنَّهُ لَقُرْآنٌ كَرِيمٌ
(77) یہ بڑا محترم قرآن ہے


﴿78﴾ فِي كِتَابٍ مَّكْنُونٍ
(78) جسے ایک پوشیدہ کتاب میں رکھا گیا ہے


﴿79﴾ لَّا يَمَسُّهُ إِلَّا الْمُطَهَّرُونَ
(79) اسے پاک و پاکیزہ افراد کے علاوہ کوئی چھو بھی نہیں سکتا ہے


﴿80﴾ تَنزِيلٌ مِّن رَّبِّ الْعَالَمِينَ
(80) یہ رب العالمین کی طرف سے نازل کیا گیا ہے

﴿81﴾ أَفَبِهَذَا الْحَدِيثِ أَنتُم مُّدْهِنُونَ
(81) تو کیا تم لوگ اس کلام سے انکار کرتے ہو


﴿82﴾ وَتَجْعَلُونَ رِزْقَكُمْ أَنَّكُمْ تُكَذِّبُونَ
(82) اور تم نے اپنی روزی یہی قرار دے رکھی ہے کہ اس کا انکار کرتے رہو


﴿83﴾ فَلَوْلَا إِذَا بَلَغَتِ الْحُلْقُومَ
(83) پھر ایسا کیوں نہیں ہوتا کہ جب جان گلے تک پہنچ جائے


﴿84﴾ وَأَنتُمْ حِينَئِذٍ تَنظُرُونَ
(84) اور تم اس وقت دیکھتے ہی رہ جاؤ


﴿85﴾ وَنَحْنُ أَقْرَبُ إِلَيْهِ مِنكُمْ وَلَكِن لَّا تُبْصِرُونَ
(85) اور ہم تمہاری نسبت مرنے والے سے قریب ہیں مگر تم دیکھ نہیں سکتے ہو

 

﴿86﴾ فَلَوْلَا إِن كُنتُمْ غَيْرَ مَدِينِينَ

(86) پس اگر تم کسی کے دباؤ میں نہیں ہو اور بالکل آزاد ہو


﴿87﴾ تَرْجِعُونَهَا إِن كُنتُمْ صَادِقِينَ 
(87) تو اس روح کو کیوں نہیں پلٹا دیتے ہو اگر اپنی بات میں سچے ہو


﴿88﴾ فَأَمَّا إِن كَانَ مِنَ الْمُقَرَّبِينَ
(88) پھر اگر مرنے والا مقربین میں سے ہے


﴿89﴾ فَرَوْحٌ وَرَيْحَانٌ وَجَنَّةُ نَعِيمٍ 
(89) تو اس کے لئے آسائش, خوشبو دار پھول اور نعمتوں کے باغات ہیں


﴿90﴾ وَأَمَّا إِن كَانَ مِنَ أَصْحَابِ الْيَمِينِ
(90) اور اگر اصحاب یمین میں سے ہے


﴿91﴾ فَسَلَامٌ لَّكَ مِنْ أَصْحَابِ الْيَمِينِ
(91) تو اصحاب یمین کی طرف سے تمہارے لئے سلام ہے


﴿92﴾ وَأَمَّا إِن كَانَ مِنَ الْمُكَذِّبِينَ الضَّالِّينَ 
(92) اور اگر جھٹلانے والوں اور گمراہوں میں سے ہے


﴿93﴾ فَنُزُلٌ مِّنْ حَمِيمٍ 
(93) تو کھولتے ہوئے پانی کی مہمانی ہے


﴿94﴾ وَتَصْلِيَةُ جَحِيمٍ
(94) اور جہنّم میں جھونک دینے کی سزا ہے


﴿95﴾ إِنَّ هَذَا لَهُوَ حَقُّ الْيَقِينِ 
(95) یہی وہ بات ہے جو بالکل برحق اور یقینی ہے


﴿96﴾ فَسَبِّحْ بِاسْمِ رَبِّكَ الْعَظِيمِ

(96) لہذا اپنے عظیم پروردگار کے نام کی تسبیح کرتے رہو 

 

Read 1837 times

Add comment


Security code
Refresh