شب قدر ، عالمي يوم قدس اور اميرالمومنين حضرت علي عليہ السلام کےبارےميں قائدانقلاب اسلامي کے فرمودات

Rate this item
(0 votes)

شب قدر توبہ واستغفار کي شب ہے ۔

شب قدرکي نہايت قدر کيجئے ۔

شب قدر وہ شب ہے جب فرشتے زميں کو آسمان سے متصل، دلوں پرنور کي بارش اور زندگي کو فضل ولطف الھي سے منور کرديتے ہيں ۔

شب قدر روحاني سلامتي کي شب ہےدلوں اور جانوں کي سلامتي کي شب ہے ۔

شب قدر درحقيقت شب امام زمانہ اور شب ولايت ہے حضرت ولي عصر اوراحنا لہ الفداء کي طرف متوجہ ہونے کي شب ہے کيونکہ سارا عالم وجود امام زمانہ کے محور کے گرد حرکت کرتا ہے .

اس دن اسلامي جمہوريہ ايران تباہي کي طرف گامزن ہوجاۓ گا جب وہ بھول جاۓ کہ اس کا نمونہ عمل حضرت علي ابن ابي طالب عليہ السلام جيسي بزرگ شخصيت ہے ۔

ہماري قوم علوي قوم اور حضرت اميرالمومنين عليہ الصلاۃ والسلام کي عاشق و مريد ہے ۔

اسلامي انقلاب حضرت اميرالمومنين کي تعليمات کا نمونہ ہے اور اسي پر ايران کا اسلامي نظام قائم ہے ۔

حضرت اميرالمومنين علي عليہ السلام کي حکومت قيام عدل و انصاف ،مظلوم کي حمايت ،ظالم کے مقابلے اور ہرحال ميں حق کي حمايت کے سلسلے ميں ايسي مثالي حکومت ہے جس پر ضرورعمل ہونا چاہيئے ۔

تاريخ بشر ميں نظم و ضبط کے پابند انسان روحاني کمالات کي اعلي منزلوں پربھي فائز ہوتے ہي ان ميں ايک حضرت اميرالمومنين علي عليہ السلام بھي ہيں ۔

حضرت امير المومنين سب کے لئے مکمل نمونہ عمل ہيں ۔

ہم اميرالمومنين حضرت علي عليہ السلام کي تعليمات پر عمل کرکے اپنے ملک و قوم کي عظيم آرزو يعني سماجي انصاف تک پہنچ سکتے ہيں ۔

عدل و انصاف حقيقي معني ميں اميرالمومنين حضرت اميرالمومنين کے وجود مقدس ان کي رفتا وگفتار اور ان کے تقوے اور ان کي توجہ ميں موجود ہے ۔

فردي لحاظ سے اميرالمومنين حضرت علي عليہ السلام تقوي کا واضح نمونہ اور حکومت وسياست و خلافت کے ميدانوں ميں آپ کي کارکردگي کي اساس عدل وانصاف ہے۔

حضرت اميرالمومنين کي حکومت کا امتياز عدل وانصاف ہے يعني عدالت مطلق يعني آپ اپني کسي ذاتي مصلحت کو عدل وانصاف پر مقدم نہيں کرتے ہيں ۔

برسوں سے کوشش کي جا رہي ہے کہ قدس فراموش ہوجاۓ ليکن عالمي يوم القدس نے اس سازش کو ناکام بنا ديا ہے۔

يوم قدس ايران سے مخصوص نہيں ہے بلکہ عالم اسلام سے متعلق ہے ۔

يوم قدس حضرت امام خميني کي کبھي نہ فراموش ہونے والي يادگار ہے۔

يوم قدس مسلمانوں کے اہم ترين اھداف ومقاصد پرتاکيد کرنے کا دن ہے ۔

يوم قدس عالم اسلام کے اھم ترين مسئلے پر تاکيد کرنےکا دن ہے ۔

يوم قدس مسلمان قوموں کي آزمائيش کا دن ہے۔

يوم قدس ايسي عظيم تحريک ہے جس نے يقينا سامراج سے مقابلے ميں گہرے اثرات چھوڑے ہيں اور چھوڑتي رہے گي .

يوم قدس صيہوني حکومت کے نحس چہرے پر زناٹے دار طمانچہ ہے۔

عيد فطر کا دن عبادت و مغفرت کا دن ہے ۔

عيد فطر کا دن اتحاد برادري اور اجتماع کا دن ہے ۔

عيد سعيدفطر مسلمانوں کي عيد اسلام و پيغمبر اسلام کي سربلندي کا سبب اور اسلام ميں کبھي نہ ختم ہونے والا خزانہ ہے ۔

عيد سعيد فطر کے موقع پر عالم اسلام کو اس مبارک دن سے عبرت حاصل کرنے اور خدا کي طرف لوٹ کرجانے کےلۓ استفادہ کرنا چاہيے ۔

دين الھي کا نفاذ سب سے اہم صفت اور تمام صفتوں کي بنيادہے اور يہي صفت اميرالمومنين عليہ السلام کي زندگي اور آپ کي حکومت کا خاصہ تھي۔

حضرت اميرالمومنين عليہ السلام ولايت اسلام کے مظہرکامل اور ولي خدا تھے ۔

حضرت اميرالمومنين علي عليہ السلام قوت و اقتدار رکھنے کے باوجود سب سے زيادہ مظلوم تھے۔

حضرت علي عليہ السلام ان نادر شخصيتوں ميں سےہيں جو ماضي اور في زمانہ نہ صرف شيعوں کے درميان بلکہ تمام مسلمانوں کے درميان بلکہ تمام آزاد ضمير انسانوں کے درميان مقبول ہيں۔

حضرت اميرالمومنين علي عليہ السلام تاريخ کي مظلوم ترين شخصيتوں ميں ہيں ،آپ کي زندگي کے ہرہر قدم پر مظلوميت دکھائي ديتي ہے آپ کي شہادت بھي مظلومانہ تھي ۔

حضرت اميرالمومين علي عليہ السلام تاريخ کي نہايت پرکشش شخصيت ہيں ۔

حضرت امير المومنين علي عليہ السلام کا حکمت آميز کلام عالموں دانشوروں اور مفکرين کےلۓ مشعل راہ ہے ۔

حضرت علي عليہ السلام کوپہچان لينا کافي نہيں بلکہ آپ کي شناخت آپ سے تقرب کا ذريعہ بنے۔

حقيقي معني ميں حضرت علي عليہ السلام فضيلتوں اور کمالات کا مکمل نمونہ ہيں ،حقيقي معني ميں حضرت علي عليہ السلام ہي انسانوں کے سب سے عظيم رھنما ہيں ۔

Read 1766 times

Add comment


Security code
Refresh